مہاراشٹر میں اسلحہ ڈپو میں آتشزدگی، 17 فوجی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption احال آتشزدگی کی وجوہات کا پتہ نہیں چل سکا ہے اور متاثرہ مقام پر امدادی کارروائیاں جاری ہیں

انڈیا کی ریاست مہاراشٹر میں واقع ملک کے سب سے بڑے فوجی اسلحہ خانے میں آگ لگنے کے واقعے میں دو افسران سمیت 17 فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔

آتشزدگی کا یہ واقعہ مہاراشٹر کے ضلع وردھا میں واقع سینٹرل ایميونشن ڈپو میں منگل کی صبح پیش آيا ہے۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق حکام نے بتایا ہے کہ اس واقعے میں دو افسران اور 17 فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں۔

آتشزدگی سے جھلس جانے والے افراد کو ساونگي ہسپتال میں داخل کروایا گیا ہے۔

تاحال آتشزدگی کی وجوہات کا پتہ نہیں چل سکا ہے اور متاثرہ مقام پر امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

ذرائع کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب کو تقریباً دو بجے اس ڈپو سے دھماکوں کی آوازیں سنائی دی تھیں۔

دھماکوں کے بعد لوگوں نے وہاں سے شعلے بلند ہوتے دیکھے اور اس کے بعد علاقے میں خوف و ہراس کا ماحول پیدا ہو گیا تھا۔

آتشزدگی کے سبب ڈپو کے قریبی چار دیہات کو خالی کروا لیا گیا ہے اور اطلاعات کے مطابق ایک ہزار افراد کو محفوظ مقامات تک پہنچایا گيا ہے۔

انڈیا حکام کا کہنا ہے کہ اسلحہ ڈپو میں دھماکے کی تحقیقات کے لیے خصوصی تحقیقاتی ٹیم قائم کی جائے گی۔

خیال رہے کہ انڈیا میں حالیہ برسوں میں اسلحہ خانوں میں آتشزدگی کے متعدد واقعات پیش آچکے ہیں۔

سنہ 2010 میں مشرقی شہر پناگڑھ میں ایک بڑے اسلحہ ڈپو میں آگ بھڑک اٹھی تھی تاہم اس میں کوئی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا تھا۔

سنہ 2007 میں انڈیا کے زیرانتظام کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں اسحلہ ڈپو میں آتشزدگی سے کم از کم 25 افراد زخمی ہوئے تھے اور ہزاروں افراد کو علاقہ خالی کرنا پڑا تھا۔

سنہ 2000 میں بھرت پور کے اسحلہ ڈپو میں آگ نے دو افراد کی جان لے لی تھی اور اس میں تقریباً 9 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا تھا۔

اسی بارے میں