ہلمند: فوجی قافلے پر حملہ، امریکی صحافی اور افغان مترجم ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP

امریکہ سے تعلق رکھنے والے ایک صحافی اور ان کے افغان مترجم افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں ہونے والے ایک حملے میں ہلاک ہوگئے ہیں۔

امریکہ کے نیشنل پبلک ریڈیو سے تعلق رکھنے والے ڈیوڈ گلکی اور ان کے مترجم ذبیح اللہ تمنا افغان فوج کے ہمراہ سفر کر رہے تھے جب قافلے پر فائرنگ کی گئی۔

جس گاڑی میں یہ دونوں افراد سفر کر رہے وہ ایک راکٹ کا نشانہ بنی اور حملے میں ڈیوڈ اور ان کے مترجم کے علاوہ گاڑی کا ڈرائیور اور ایک افغان فوجی بھی ہلاک ہوا۔

امریکہ کے نیشنل پبلک ریڈیو نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ڈیوڈ کے ہمراہ این پی آر کے مزید دو اہلکار بھی سفر کر رہے تھے لیکن وہ محفوظ رہے۔

این پی آر کے بیان میں کہا گیا ہے کہ جس گاڑی میں 50 سالہ ڈیوڈ اور 38 سالہ تمنا سوار تھے اسے مرجہ کے قریب راکٹ کا نشانہ بنایا گیا۔

بیان کے مطابق ذبیح اللہ تمنا فوٹوگرافر اور صحافی بھی تھے اور ساتھ ساتھ مترجم کا کام بھی کرتے تھے۔

ڈیوڈ کئی ایوارڈ حاصل کر چکے تھے بشمول 2007 میں عراق میں امریکی میرینز پر ویڈیو بنانے پر نیشنل ایمی ایوارڈ بھی حاصل کیا۔

سنہ 2011 میں وائٹ ہاؤس فوٹوگرافرز ایسوسی ایشن نے انھیں بہترین فوٹوگرافر کے ایوارڈ سے نوازا تھا۔

اسی بارے میں