انڈیا میں تیار کردہ جنگی طیارہ فضائیہ میں شامل

تصویر کے کاپی رائٹ .
Image caption تیجس کو ڈیزائن اور تیار تو انڈیا میں ہی کیا گیا ہے لیکن اس کی بعض ٹیکنالوجی، جیسے اس کا انجن اور ریڈار بیرونی ممالک سے درآمد کیے گئے ہیں

انڈیا نے مقامی سطح پر تیار کردہ تیجس نامی وہ جنگی طیارہ فضائیہ میں شامل کر لیا ہے جس کی تیاری پر 31 برس قبل کام شروع کیا گیا تھا۔

اس جہاز کو انڈین کمپنی ’ہندوستان ایروناٹکس لمیٹڈ‘ (ایچ اے ایل) نے تیار کیا ہے اور یہ ملک میں ڈیزائن کیا جانے والا پہلا جنگی طیارہ ہے۔

امکان ہے کہ ’تیجس‘، جس کا مطلب تابکار ہے، کو روسی ساخت کے مگ 21 طیاروں کی جگہ استعمال کیا جائے گا جو بہت پرانے ہوچکے ہیں۔

کمپنی نے جمعے کو دو تیجس طیارے بھارتی فضائیہ کو سونپے ہیں۔

تیجس وہ دوسرا طیارہ ہے جسے انڈیا میں تیار کیا گیا ہے۔ اس سے قبل سنہ 1961 میں بھی انڈیا نے ’ایچ ایف 24 ماروت‘ نامی ایک جنگی جہاز خود تیار کیا تھا۔

تیجس کو ڈیزائن اور تیار تو انڈیا میں ہی کیا گیا ہے لیکن اس کی بعض ٹیکنالوجی، جیسے کہ انجن اور ریڈار بیرون ملک سے درآمد کیے گئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ .
Image caption بھارت نے اس سے قبل سنہ 1961 میں بھی ’ایچ ایف 24 ماروت‘ نامی ایک جنگی جہاز خود اپنے ملک میں تیار کیا تھا۔ اس جہاز کو بھی ایچ اے ایل کمپنی نے ہی بنایا تھا

2011 میں کمپنی نے اس جہاز کو پرواز کے لیے فٹ قرار دیا تھا جسے اب فضائیہ میں شامل کیا گیا ہے۔

بھارتی خبر رساں ادارے پی ٹی آئی کے مطابق ان دونوں جہازوں کو انڈین فضائیہ کے ’فلائنگ ڈیگرز 45‘ سکوارڈن میں شامل کیا جائےگا۔

پی ٹی آئی کے مطابق اس برس کے اندر اندر انڈین فضائیہ چھ تیجس جہاز شامل کرےگی جبکہ آئندہ برس وہ مزید آٹھ جہاز شامل کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

انڈیا کے دفا‏عی حکام کا کہنا ہے کہ تیجس ایک انجن والا دنیا کا سب سے ہلکا جنگی طیارہ ہے۔

یہ فضا سے فضا میں اور فضا سے زمین پر مار کرنے والے ہتھیار لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

اسی بارے میں