افغانستان: ٹینکر اورمسافر بسں کے تصادم میں 36 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption رواں سال مئی میں صوبہ غزنی میں دو بسوں اور ایک آئل ٹینکر کے تصادم میں 73 افراد ہلاک گئے تھے

افغانستان کے جنوبی صوبے میں ایک مسافر اور آئل ٹینکر کے تصادم میں کم از کم 36 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

حادثے کا شکار ہونے والی بس قندھار سے کابل جارہی تھی جب صوبہ زابل میں جلدک کے علاقے میں یہ حادثہ پیش آیا۔

ہلاک ہونے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جبکہ آتشزدگی کے باعث متعدد لاشیں ناقابل شناخت ہیں۔

اس حادثے میں کم از کم 25 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جنھیں صوبہ زابل کے دارالحکومت قلات اور قندھار پہنچایا گیا ہے۔

زخمیوں میں کچھ کی حالت تشویش ناک ہے۔

صوبائی گورنر کے ترجمان گل اسماعیل سیال کا اس حادثے کای ذمہ داری کا الزام دونوں گاڑیوں کے ڈرائیوروں کی لاپرواہ ڈرائیونگ پر عائد کیا ہے۔

افغانستان میں اکثر ٹریفک حادثات پیش آتے رہتے ہیں جس کی وجہ سڑکوں اور گاڑیوں کی‌خراب حالت بتائی جاتی ہے۔

خیال رہے کہ کابل کو قندھار سے ملانے والی سڑک فوجی نقل حرکت کے لیے بھی استعمال ہوتی ہے اور بعض اوقات ڈرائیور کسی مداخلت سے بچنے کے لیے گاڑی زیادہ تیز چلانا شروع کر دیتے ہیں۔

رواں سال مئی میں صوبہ غزنی میں دو بسوں اور ایک آئل ٹینکر کے تصادم میں 73 افراد ہلاک گئے تھے جبکہ اپریل سنہ 2013 میں صوبہ قندھار میں اسی قسم کے ایک حادثے میں کم از کم 30 افراد کی موت ہوئی تھی۔

اسی بارے میں