لیبیا میں لوٹے گئے ہتھیاروں پر تشویش

سلامتی کونسل نے لیبیا اور اسکے پڑوسی ملکوں سے کہا ہے کہ وہ لوٹے گئے ہتھیاروں کے پھیلاؤ کو روکیں ورنہ یہ ہتھیار القاعدہ اور دوسرے شدت پسند گروہوں کے ہاتھ لگ سکتے ہیں۔

اس سلسلے میں سلامتی کونسل میں منظور ہونے والی قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ کرنل قذافی کی فوجوں کے پاس کندھوں پر رکھ کر زمین سے فضا مار کرنے والے ہتھیاروں کی بڑی کھیپ اب بھی مسافر طیاروں کے لیے خطرے کا باعث ہے۔

کئی مہلک ہتھیار لیبیا پر نیٹو کی بمباری میں تباہ ہوگئے تھے لیکن حکام کے مطابق ابھی یہ واضح نہیں کہ ایسے کتنے ہتھیار آج بھی لوگوں کے پاس موجود ہیں۔

اسی بارے میں