طالبان کا پکتیہ کے گورنر کے دفتر پر حملہ

افغانستان کے جنوب مشرقی صوبے پکتیہ میں خود کش حملہ آوروں نے گورنر کے دفتر پر ہلہ بول دیا جس میں ایک شخص کے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے۔

سمکنی ضلع میں مشیں گننوں اور راکٹ لانچروں سے مسلح چار خوکش حملہ آور سرکاری دفاتر کی عمارت میں گھس گئے۔

سکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ پکتیہ کے گورنر کا ایک محافظ ہلاک ہو گیا ہے۔

جس وقت یہ حملہ کیا گیا اس وقت نیٹو اور افغان عمائدین کے درمیان ایک اجلاس منعقد ہو رہا تھا۔

ایک عینی شاہد حاجی محمد عیسیٰ نے بی بی سی کو بتایا کہ ’میں گورنر کے دفتر میں بیٹھا ہوا تھا جب میں نے ایک زور دار دھماکے کی آواز سنی اور اس کے بعد لڑائی شروع ہو گئی۔‘

چند عمائدین نے ضلعی گورنر سے سکیورٹی فراہم کرنے کی درخواست کی تھی کیونکہ ان میں سے کچھ کو لوئے جرگے میں شرکت کرنے کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

گورنر کے دفتر میں موجود بہت سے عمائدین آئندہ ہفتے لوئے جرگے میں شرکت کے لیے جانے والے تھے۔

مقامی عمائدین کے اس اجلاس میں طالبان سے مفاہمت اور مستقبل میں امریکہ سے تعلقات کی نوعیت پر بھی تبادلہ خیال کیا جا رہا تھا۔