’شرح نمو صرف دو اعشاریہ چار فیصد‘

پاکستان کے مرکزی بینک نے اپنی سالانہ رپورٹ میں کہا ہے کہ مالی سال دو ہزار دس دو ہزار گیارہ میں پاکستان کی معیشت کی شرح نمو صرف دو اعشاریہ چارفیصد رہی جبکہ اصل ہدف چار اعشاریہ پانچ فیصد تھا۔

توانائی کے بحران کی وجہ سے پیداواری شعبہ بھی شدید متاثر ہوا اور صنعتی پیداوار منفی اعشاریہ ایک فیصد رہی جبکہ سروسز سیکٹر میں مجموعی طور پر چار اعشاریہ ایک فیصد اضافہ ہوا جو ہدف سے کم ہے۔

رپورٹ کے مطابق مالی سال کے دوران سیلاب کی وجہ سے ملک کا ایک تہائی علاقہ زیر آب رہا جس سے تقریباً چھیاسٹھ لاکھ افراد تین ماہ تک بےروزگار رہے اوراس سےمعیشت کو دو ارب ساٹھ کروڑ ڈالرز کانقصان ہوا۔