’میمو ایک بے وقعت کاغذ کا ٹکڑا ہے‘

سپریم کورٹ میں متنازع میمو کے مقدمے کی سماعت کے دوران اٹارنی جنرل مولوی انوار الحق نے کہا ہے کہ وفاق کے نزدیک میمو صرف ایک بے وقعت کاغذ کا ٹکڑا ہے۔

منگل کو سماعت کے موقع پر انہوں نے عدالت نے دوبارہ درخواست کی وہ اس سلسلے میں دائر درخواستیں مسترد کر دے۔

اٹارنی جنرل کا یہ بھی کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کو معاملے کی سماعت کا اختیار نہیں اور چونکہ معاملہ قومی سلامتی کی پارلیمانی کمیٹی کے پاس ہے اس لیے اس کی سفارشات کا انتظار کیا جانا چاہیے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ پارلیمانی کمیٹی کی تحقیقات عدالتی کارروائی کو نہیں روک سکتیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر پارلیمانی کمیٹی تحقیقات کر رہی ہے اور سپریم کورٹ بھی تحقیقات کرنا چاہے اور اس پر کوئی قدغن نہیں ہے۔

چیف جسٹس نے اٹارنی جنرل سے پوچھا کہ کیا یہ عوامی اہمیت کا معاملہ نہیں جس پر مولوی انواد الحق نے کہا کہ ان کی ذاتی رائے میں یہ عوامی اہمیت کا معاملہ تو ہے لیکن اس میں بنیادی حقوق متاثر نہیں ہوتے۔

سپریم کورٹ میں میمو کیس کی سماعت ابھی جاری ہے۔