’ہیکنگ خود مختاری کی خلاف ورزی ہے‘

اسرائیل نے اپنے چھ لاکھ شہریوں کے کریڈٹ کارڈ رکھنے والے افراد کی تفصیلات کو ہیک کیے جانے کے بعد کہا ہے کہ وہ ہیکنگ کو دہشتگردی تصور کرتا ہے اور اس کا ارتکاب کرنےوالا جوابی کارروائی سے نہیں بچ سکے گا۔

ایک ہیکر نے جو اپنے آپکو آکسعمر کے نام سے شناخت کرواتا ہے، چھ لاکھ اسرائیلی شہریوں کی کریڈٹ کی تفصیلات شائع کر دی ہیں۔

بعض اطلاعات کے مطابق آکسعمر میکسیکو کا انیس سالہ نوجوان ہے۔

اسرائیل کے نائب وزیر خارجہ ڈینی آئیلون نے کہا کہ وہ سائبر حملوں کو اسرائیلی خود مختاری کی خلاف ورزی اور دہشتگردی کے برابر جرم تصور کریں گے۔

ڈپٹی وزیر خارجہ نے کہا ہےکہ اسرائیل کے پاس ایسی صلاحیت موجود ہے جو ان ہیکروں کے خلاف کارروائی کر سکتا ہے اور کوئی ہیکر بھی اسرائیل کی کارروائی سے بچ نہیں سکے گا۔