غذائی قلت، ’پانچ سو ملین بچے متاثر ہوں گے‘

بین الاقوامی امدادی تنظیم سیو دی چلڈرن کا کہنا ہے کہ خوراک کی کمی کے باعث اگلے پندرہ برسوں میں پانچ سو ملین بچے جسمانی اور ذہنی طور پر متاثر ہوں گے۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ غریب ممالک میں غذائی قلت پر قابو پانے کے لیے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔

سیو دی چلڈرن کی جانب سے بھارت، پاکستان، نائیجیریا، پیرو اور بنگلہ دیش میں کیے جانے والے سروے میں معلوم ہوا ہے کہ زیادہ تر خاندان گوشت، دودھ یا سبزیاں نہیں خرید سکتے۔

تنظیم نے مزید کہا ہے کہ بچوں کی موت میں سے ایک تہائی اموات غذائی قلت کے باعث ہوتی ہیں لیکن عالمی سطح پر توجہ نہیں دی جاتی۔