یمن میں جھڑپ، پینتیس فوجی ہلاک

افریقی ملک یمن میں حکام کا کہنا ہے القاعدہ سے تعلق رکھنے والے شدت پسندوں نے ملک کے جنوبی علاقے میں کم از کم پینتیس فوجیوں کو ہلاک اور متعدد کو زخمی کر دیا ہے۔

حکام کے مطابق یہ واقعہ رنجبار کے نواح میں اس وقت پیش آیا جب شدت پسندوں نے فوج کی ایک چوکی کو نشانہ بنایا۔

اس حملے کے دوران دونوں جانب سے فائرنگ کا تبادلہ کئی گھنٹے تک جاری رہا اور اس دوران پینتیس فوجیوں کے علاوہ بیس شدت پسند بھی مارے گئے۔

بی بی سی کے نامہ نگار کے مطابق اگرچہ حملہ آوروں کا تعلق القاعدہ سے جوڑا جا رہا ہے لیکن یمنی عوام کا خیال ہے کہ یہ سابق صدر علی عبداللہ الصالح کے حامی تھے۔