قومی اسمبلی میں ایم کیو ایم کا احتجاج

پاکستان کی قومی اسمبلی میں حکومت کی اتحادی جماعت متحدہ قومی موومنٹ نے دوسرے روز بھی کراچی میں بھتہ خوری اور اغوا کاری کے خلاف اپنا احتجاج جاری رکھا اور زوردار انداز میں نعرہ بازی کرتے ہوئے ڈیسک بجائے اور کارروائی میں خلل ڈالا۔

وقفہ سوالات ختم ہونے کے بعد توجہ دلاؤ نوٹس پر کارروائی ہونی تھی لیکن ایم کیو ایم کے رکن وسیم اختر نکتہ اعتراض پر کھڑے ہوگئے اور کہا کہ کراچی میں اغوا برائے تاوان اور بھتہ خوری کے واقعات بڑھ گئے ہیں اور سندھ حکومت ناکام ہوگئی ہے۔

انہوں نے رینجرز اور پولیس تماشہ دیکھتے رہتے ہیں اور بھتہ خوروں کے خلاف کارروائی نہیں کرتے۔