یہودی بستیاں، امریکہ کو تشویش

امریکہ کا کہنا ہے کہ اسے ان خبروں پر تشویش ہے کہ اسرائیل نے غرب اردن کی تین یہودی بستیوں کو قانونی حیثیت دے دی ہے۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں اسرائیلی حکام سے مزید معلومات اور وضاحت حاصل کی جا رہی ہے۔

یہ یہودی بستیاں، جن میں تقریباً آٹھ سو آبادکار مقیم ہیں، انیس سو نوّے میں قائم کی گئی تھیں لیکن انہیں اب تک قانونی حیثیت حاصل نہیں تھی۔

فلسطینیوں نے اس اسرائیلی فیصلے کی مذمت کی ہے۔ عالمی برادری تمام اسرائیلی بستیوں کو غیر قانونی قرار دیتی ہے۔ خواہ اسرائیلی حکام نے انہیں قانونی حیثیت دی ہو یا نہیں۔

اسرائیل و فلسطین کے درمیان اس معاملے پر بات چیت دو ہزار دس سے بند ہے۔