خیبر ایجنسی: کالعدم تنظیموں میں جھڑپیں

پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں کالعدم شدت پسند تنظیموں انصار الاسلام اور لشکر اسلام کے درمیان جھڑپوں میں چھ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

خیبر ایجنسی ہی میں تحریک طالبان پاکستان کے پانچ ٹھکانوں کو گن شیپ ہیلی کاپٹروں سے نشانہ بنایا۔

خیبر ایجنسی میں شلوبر کے علاقے سے لوگوں کی نقل مکانی جاری ہے۔

سکیورٹی فورسز کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ بدھ کی صبح خیبر ایجنسی کے دور افتادہ پہاڑی علاقے وادی تیراہ میں توری خیل کے مقام پر انصارالاسلام اور لشکر اسلام کے جنگجوؤں کے درمیان تازہ جھڑپیں ہوئیں۔

اہلکار کے مطابق دونوں طرف سے چھ افراد ہلاک ہوئے ہیں اور ہلاک ہونے والوں میں چار لشکر اسلام کے اور دو انصارالاسلام کے جنگجو بتائے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فریقین نے ایک دوسرے کے مورچوں پر بھاری ہتھیاروں سے حملے کیے اور انصارالاسلام کے جنگجووں نے لشکر اسلام سے دو مورچے اپنے قبصے میں لے لیے ہیں۔