’قرآن جلانے پر انضباطی کارروائی ہوگی‘

امریکی حکام نے کہا ہے کہ افغانستان میں ایک فوجی اڈے پر قرآن کے نسخے نذر آتش کیے جانے کے واقعے کی فوجی تحقیقات کے بعد کم از کم سات امریکی اہلکاروں کے خلاف انضباطی کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔

قرآن کے نسخے جلائے جانے کا یہ واقعہ فروری میں پیش آیا تھا جس کے ردعمل میں افغانستان میں چھ روز تک پرتشدد احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔

امریکی انتظامیہ کے ایک اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ’تحقیقات کے نتائج میں امریکی بری فوج کے چھ جبکہ بحریہ کے ایک اہلکار کو انتظامی سزا دینے کو کہا گیا ہے لیکن ان پر مجرمانہ الزامات عائد نہیں کیے گئے‘۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ تاحال اس معاملے کی تحقیقات کے نتائج پر حتمی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔