چین: سرکاری عمارتوں پر پولیس تعینات

جنوبی چین کے ایک قصبے میں ملک کے دوسرے حصوں سے تعلق رکھنے والے مہاجر کارکنوں کی ہنگامہ آرائی کے بعد سرکاری عمارتوں کی حفاظت کے لیے پولیس تعینات کردی گئی ہے۔

شاکسی نامی قصبے میں ہونے والی اس ہنگامہ آرائی میں کم از کم تیس لوگ زخمی ہوئے۔ یہ قصبہ گوانگ ڈانگ صوبے میں ہے جہاں بڑا صنعتی علاقہ ہے۔

ہنگامہ آرائی ان اطلاعات کے بعد شروع ہوئی کہ پولیس نے ایک مہاجر کارکن کے بیٹے کو اس لیے مارا پیٹا کہ اس کا ایک مقامی باشندے سے جھگڑا ہوگیا تھا۔

بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ چین کی تیزی سے ترقی کرتی برآمدات کا انحصار سستی مزدوری پر ہے لیکن اب مزدوروں میں کم تنخواہوں اور سماجی حقوق نہ ملنے کے خلاف بے چینی بڑھ رہی ہے۔