جاپان کا جوہری ری ایکٹر دوبارہ شروع

جاپان نے تقریبًا دو ماہ بعد اپنا ایک جوہری ری ایکٹر دوبارہ شروع کر دیا ہے۔

گزشتہ برس آنے والے زلزلہ اور سونامی کے نتیجے میں فوکوشیما جوہری پلانٹ کی تباہی کے بعد جاپان نے اپنے تمام جوہری ری ایکٹروں کا جائزہ لینے کے لیے یکے بعد دیگرے اپنے تمام جوہری ری ایکٹر بند کر دیے تھے۔

مغربی ساحل پر فوکوئی میں اوہی کے مقام پر قائم جوہری ری ایکٹر ایک ہفتے میں پوری طرح سے کام کرنے لگے گا۔

اپریل میں اس جوہری پلانٹ کی قوت برداشت کی جانچ کے بعد اسے پوری طرح سے محفوظ قرار دیا گیا ہے تاہم زیادہ تر جاپانی اس کے دوبارہ شروع کیے جانے کے خلاف ہیں۔

ان ری ایکٹروں کے بند ہونے کے بعد ملک میں بجلی کے شدید بحران کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

جاپانی وزیر اعظم یوشی ہیکو نودا کا کہنا ہے کہ بغیر جوہری توانائی کے لوگوں کے معیار کو پورا نہیں کیا جا سکتا ہے۔