دہشتگردی سے نمٹنے کے لیےقانون سازی لازم

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے دہشتگردی کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے نئی قانون سازی پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں یہ عمل بدقسمتی سے سست روی کا شکار ہے۔

پاکستان کے یومِ آزادی کے موقع پر ایبٹ آباد کے علاقے کاکول میں واقع فوجی اکیڈمی میں سالانہ پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے جنرل کیانی کا کہنا تھا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ صرف فوج کی نہیں بلکہ پاکستانی عوام بھی اس کا حصہ ہیں۔

پاکستانی فوج کے شعبۃ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق انہوں نے کہا کہ ’دہشتگردی کے خلاف لڑائی صرف پاکستانی فوج کی نہیں بلکہ پوری قوم کی ہے اور ضروری ہے کہ قوم اس کے لیے یکسو ہو کیونکہ فوج کی کامیابی عوام کے تعاون سے ہی ممکن ہے‘۔

جنرل کیانی نے کہا کہ اس جنگ میں فوج نے جو بھی قربانیاں دی ہیں ان کا پھل تبھی ملے گا جب سول انتظامیہ فوج کی مدد کے بغیر اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کے قابل ہو جائے۔ ان کے مطابق ابھی اس مقصد کی تکمیل میں مزید وقت لگے گا۔