باجوڑ میں جھڑپیں، ہلاکتوں کے متضاد دعوے

آخری وقت اشاعت:  منگل 28 اگست 2012 ,‭ 14:50 GMT 19:50 PST

پاکستان کے قبائلی علاقے باجوڑ ایجنسی کی تحصیل سالار زئی میں سکیورٹی فورسز، مقامی لشکر اور طالبان کے درمیان جھڑپیں آج پانچویں روز بھی ہوئیں جن میں ہلاکتوں کے بارے میں متضاد دعوے سامنے آرہے ہیں۔

تحریک طالبان ملاکنڈ ڈویژن کے ترجمان مولانا سراج الدین نے تازہ حملے میں دس سکیورٹی اہلکاروں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہلاک ہونے والے اہلکاروں کی ویڈیو چند روز میں جاری کی جائے گی۔

دوسری طرف سکیورٹی فورسز کا کہنا ہے کہ پانچ دنوں سے جاری جھڑپوں میں چالیس کے قریب شدت پسند مارے گئے ہیں تاہم فریقین کے دعوؤں کی آزاد ذرائع سے تصدیق نہیں ہوسکی۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔