یمن کے وزیر دفاع پر قاتلانہ حملہ

آخری وقت اشاعت:  منگل 11 ستمبر 2012 ,‭ 11:32 GMT 16:32 PST

یمن کے دارالحکومت صنعاء میں وزیر دفاع میجر جنرل محمد ناصر احمد ایک قاتلانہ حملے میں بچ گئے ہیں لیکن ان کے پانچ محافظ ہلاک ہو گئے۔

اطلاعات کے مطابق دارالحکومت صنعاء کے مرکزی علاقے میں سرکاری دفاتر کے قریب وزیر دفاع پر قاتلانہ حملہ کیا گیا۔

اطلاعات کے مطابق ایک گاڑی میں دھماکہ ہوا ہے اور اس کے بعد شہر میں دھویں کے بادل چھا گئے۔

خیال رہے کہ وزیر دفاع پر حملہ ایک ایسے وقت کیا گیا ہے جب ایک دن پہلے ہی یمن میں القاعدہ کے نائب سربراہ ایک حملے میں ہلاک ہو گئے تھے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔