سری لنکا کی چیف جسٹس کا مواخذہ

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 1 نومبر 2012 ,‭ 07:41 GMT 12:41 PST

سری لنکا کی حکومت نے ملک کی چیف جسٹس شیرانی بندرانائیکے کے خلاف مواخذہ کی کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔
حکومت اور عدلیہ کے درمیان جاری محاذ آرائی کے بعد حکومت نے چیف جسٹس پر الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے اپنے عہدے کے اختیارات سے تجاوز کیا۔
حکومتی ترجمان کیہلیا رامبوکویلا نے کہا کہ مواخذے کے لیے دستاویزات جمعرات کو پارلیمان کے سپیکر کے حوالے کر دیے گئے ہیں۔
حکومتی ترجمان نے کسی قسم کے معین الزامات کا ذکر نہیں کیا مگر کہا کہ اس کارروائی کو پچھتر ممبران پارلیمان کی تائید حاصل ہے۔













BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔