توہینِ مذہب:ایف آئی آر خارج کرنے کا حکم

آخری وقت اشاعت:  منگل 20 نومبر 2012 ,‭ 04:58 GMT 09:58 PST

اسلام آباد ہائیکورٹ نے مسیحی لڑکی رمشا مسیح کے خلاف درج توہینِ مذہب کی ایف آئی آر خارج کرنے کا حکم دیا ہے۔

رمشا مسیح پر مقدس مذہبی اوراق نذرِ آتش کرنے کا الزام تھا تاہم پندرہ صفحات پر مشتمل فیصلے میں عدالت نے کہا ہے کہ ملزمہ کو کسی نے بھی قرآنی اوراق جلاتے ہوئے نہیں دیکھا۔

منگل کو سماعت کے دوران چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے کہا کہ ایسے الزامات لگاتے ہوئے انتہائی احتیاط برتنی چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ انتہائی حساس معاملہ ہے اور کسی مسلم یا غیر مسلم کے خلاف بےبنیاد اور غلط الزامات نہیں لگانے چاہییئں۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔