حامد میر پر حملہ ہم نے کیا: تحریکِ طالبان

آخری وقت اشاعت:  منگل 27 نومبر 2012 ,‭ 07:36 GMT 12:36 PST

کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان نے صحافی حامد میر پر حملے کی ناکام کوشش کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

تنظیم کے ترجمان احسان اللہ احسان نے بی بی سی کو فون کر کے اس ناکام کوشش کی ذمہ داری قبول کی۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ حملہ اس لیے کیا گیا کہ حامد میر سیکولر صحافی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ طالبان کی شوریٰ نے حامد میر سمیت دیگر صحافی طالبان کی لسٹ پر ہیں۔

یاد رہے کہ پیر کو نجی ٹی وی چینل جیو کے اینکر پرسن حامد میر کی گاڑی کے نیچے بارودی مواد نصب کیا گیا تھا جس کو ناکارہ بنا دیا گیا تھا۔

وزیر داخلہ رحمان ملک کا کہنا ہے کہ صحافی حامد میر کی گاڑی میں دھماکہ خیز مواد نصب کیے جانے کے واقعے کی تحقیقات شروع کی دی گئی ہے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔