’حملوں کی روک تھام کے لیے کوشاں ہیں‘

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 30 نومبر 2012 ,‭ 10:08 GMT 15:08 PST

افغانستان کے وزیرِ خارجہ ڈاکٹر زلمے رسول نے کہا ہے کہ افغان سرزمین سے پاکستانی علاقے میں ہونے والے حملوں کی روک تھام کے لیے تمام ممکنہ کوششیں کی جا رہی ہیں تاہم اس علاقے میں امن قائم کرنا ایک مشکل عمل ہے۔

انہوں نے یہ بات پاکستانی وزیرِ خارجہ حنا ربانی کھر سے بات چیت کے بعد اسلام آباد میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کہی۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے افغان وزیر خارجہ نے کہا کہ اُن کے ملک کی سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ صوبہ کُنٹر اور نورستان سے پاکستانی علاقے میں ہونے والے حملے روکنے کے لیے افغان حکومت مسلسل کوششیں کر رہی ہے لیکن وہاں امن و امان کا قیام مشکل کام ہے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔