شام: روس کی امریکہ پر تنقید

آخری وقت اشاعت:  بدھ 12 دسمبر 2012 ,‭ 09:01 GMT 14:01 PST

روس نے امریکہ کی جانب سے شام میں اپوزیشن اتحاد کو رسمی طور پر ملک کی عوام کا ’جائز نمائندہ‘ تسلیم کرنے کے اعلان پر تنقید کی ہے۔

روس کے وزیرِ خارجہ سرگئی لاورو نے کہا ہے کہ امریکہ شام میں سیاسی تبدیلی کی کوششوں کے مخالف جا رہا ہے اور اس نے صدر بشار الاسد کے مخالفین کی عسکری کامیابیوں پر داؤ لگایا ہے۔

امریکی صدر براک اوباما نے منگل کو شامی حزبِ اختلاف کے اتحاد کو شامی عوام کا واحد اور جائز نمائندہ تسلیم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

فرانس پہلے ہی اس اتحاد کو شام کا ’واحد نمائندہ‘ کہہ چکا ہے جبکہ ترکی اور چھ خلیجی ممالک پہلے ہی اسے مکمل طور پر تسلیم کر چکے ہیں۔

امریکہ میں اے بی سی نیوز سے بات کرتے ہوئے امریکی صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ اس اتحاد نے شامی عوام کی نمائندگی کا حق حاصل کر لیا ہے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔