دلّی کے عوام سے پرامن رہنے کی اپیل

آخری وقت اشاعت:  پير 24 دسمبر 2012 ,‭ 05:41 GMT 10:41 PST

بھارت کے وزیراعظم منموہن سنگھ نے دارالحکومت نئی دلّی میں ایک لڑکی سے اجتماعی جنسی زیادتی کے خلاف پرتشدد احتجاج کے بعد عوام سے پرامن رہنے کی اپیل کی ہے۔

گزشتہ اتوار کی رات دلّی میں ایک چلتی ہوئی بس میں تئیس سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی گئی تھی جس کے خلاف ملک بھر میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے اور تقریباً ہفتہ بھر سے بھارت میں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

پیر کو قوم سے ٹی وی پر مختصر خطاب میں وزیراعظم منموہن سنگھ نے کہا کہ ’میں تمام شہریوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ امن و امان قائم رکھیں۔ میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم اس ملک میں خواتین کا تحفظ یقینی بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کریں گے۔‘

اتوار کو بھی وزیراعظم کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا جس میں کہا گیا تھا کہ وہ اس معاملے پر احتجاج کرنے والے افراد اور پولیس کے مابین جھڑپوں پر افسردہ ہیں۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ ’ہم سب اس خاتون کے لیے فکرمند ہیں جو دلی میں ایک گھناؤنے جرم کا شکار ہوئی ہے۔۔۔اور اس خوفناک واقعے پر عوام کا غصہ جائز اور حقیقی ہے‘۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔