کامران ہلاکت کیس، چیئرمین نیب کو نوٹس

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 24 جنوری 2013 ,‭ 09:24 GMT 14:24 PST

سپریم کورٹ آف پاکستان نے نیب کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کامران فیصل کی موت سے متعلق درخواست کی سماعت کے دوران نیب کے چیئرمین سمیت اعلیٰ حکام کو نوٹس جاری کر دیے ہیں۔

چیئرمین قومی احتساب بیورو کے علاوہ ادارے کے ڈپٹی چیئرمین، اسلام آباد پولیس کے سربراہ اور پولی کلینک کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو بھی نوٹس جاری کیے گئے ہیں۔

عدالت نے سپریم کورٹ کے رجسٹرار کو کامران فیصل کی موت کی ویڈیو بھی پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں قائم ہونے والے اس دو رکنی بینچ نے کہا ہے کے کرائے کے بحلی گھروں کے اہم مقدمے میں عدالت کی معاونت کرنے والے ایک تفتیشی افسر ہلاک ہو گئے یا قتل کر دیے گئے لیکن کوئی بھی ادارہ حرکت میں نہیں آیا۔

اسلام آباد پولیس کے سربراہ کو کہا گیا ہے کہ اس واقعہ سے متعلق جو بھی پیش رفت ہوئی ہے اس سے عدالت کو آگاہ کیا جائے۔

عدالت نےچیئر مین پی ٹی اے کو بھی نوٹس جاری کیا ہے کہ وہ کامران فیصل کے موبائل کا ریکارڈ عدالت میں پیش کریں۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔