ملالہ کا آپریشن کے بعد پہلا پیغام

آخری وقت اشاعت:  پير 4 فروری 2013 ,‭ 14:13 GMT 19:13 PST

پاکستان کے علاقے سوات سے تعلق رکھنے والی پاکستانی طالبہ ملالہ یوسفزئی نے اپنے آپریشن کے بعد جاری کیے گئے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنانا چاہتی ہیں کہ ہر بچہ تعلیم حاصل کرے۔

ملالہ جو اس وقت پندرہ سال کی ہیں طالبان کے ایک حملے میں زخمی ہونے کے بعد اس وقت برطانیہ کے شہر برمنگھم میں مقیم ہیں جہاں ان کا علاج ہو رہا ہے۔

ملالہ نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ ’میں بول سکتی ہوں، دیکھ سکتی ہوں آپ سب کو دیکھ رہی ہوں۔ میں دن بدن بہتر ہو رہی ہوں اور یہ صرف لوگوں کی دعاؤں کا نتیجہ ہے‘۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔