آنگ سان سو چی دوبارہ قائد منتخب

آخری وقت اشاعت:  اتوار 10 مارچ 2013 ,‭ 08:49 GMT 13:49 PST

برما میں حزبِ اختلاف کی جماعت نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی نے جمہوریت پسند رہنما آنگ سان سو چی کو دوبارہ اپنا قائد منتخب کر لیا ہے۔

یہ فیصلہ جماعت کی پہلی کانگریس یا عام اجلاس میں کیا گیا۔

نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی یا این ایل ڈی نے سنہ 1990 میں برما میں عام انتخابات جیتے تھے لیکن ملک کے فوجی حکمرانوں نے اسے برسرِ اقتدار نہیں آنے دیا تھا اور آنگ سان سو چی کو بیس برس تک نظربند رکھا گیا تھا۔

تاہم گزشتہ برس برمی پارلیمان کے انتخابات میں ایک مرتبہ پھر اس جماعت نے قابلِ ذکر تعداد میں نشستیں حاصل کیں اور اب برما کی نئی سول حکومت کی جانب سے اصلاحات کے بعد وہ 2015 کے عام انتخابات کی تیاری کر رہی ہے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔