’شام میں قتلِ عام کے نئے ثبوت ملے ہیں‘

آخری وقت اشاعت:  پير 11 مارچ 2013 ,‭ 12:06 GMT 17:06 PST

اقوامِ متحدہ کا کہنا ہے کہ اسے شام میں قتلِ عام اور آبادیوں کی مکمل تباہی کے ثبوت ملے ہیں۔

ایک نئی رپورٹ میں اقوامِ متحدہ کے انسانی حقوق کے لیے تفتیش کاروں نے شامی حکومت اور باغیوں کو ملک میں عام شہریوں کی جانوں کی قدر نہ کرنے اور لاپرواہی برتنے کا الزام لگایا ہے۔

رپورٹ میں حمص میں قتلِ عام کے تین واقعات کی مثالیں دیتے ہوئے کہا گیا ہے جہاں اقوامِ متحدہ کے مطابق حکومتی افواج نے پچاس قیدیوں کو قتل کیا جبکہ بہت سے خاندانوں کو ان کے گھروں میں ہلاک کیا گیا لیکن ان ہلاکتوں کے ذمہ داران کا پتہ نہیں چل سکا۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔