’بلوچستان اسمبلی 19 مارچ کو تحلیل ہوگی‘

آخری وقت اشاعت:  پير 18 مارچ 2013 ,‭ 19:58 GMT 00:58 PST

بلوچستان اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے ڈپٹی پارلیمانی رہنما علی مدد جتک نے کہا ہے کہ صوبائی اسمبلی 19 مارچ کو تحلیل کر دی جائے گی۔

اس بات کا اعلان انہوں نے صوبائی وزیر اطلاعات محمد یونس ملازئی کے ہمراہ اتوار کی سہ پہر وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران کیا۔

خیال رہے کہ بلوچستان اسمبلی کی آئینی مدت چھ اپریل کو ختم ہونی ہے لیکن سنیچر کو اسلام آباد میں وزیراعظم اور چاروں صوبائی وزرائے اعلیٰ کے اجلاس میں قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے انتخابات کے ایک ہی دن انعقاد پر اتفاقِ رائے ہوا تھا۔

اس اتفاقِ رائے کے بعد یہ اطلاعات بھی سامنے آئی تھیں کہ چاروں صوبائی اسمبلیاں انیس مارچ کو تحلیل کرنے پر اتفاق بھی ہوا ہے۔ تاہم بعدازاں پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف نے ایک پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ ایسا کچھ نہیں ہوا اور پنجاب اسمبلی کی مدت نو اپریل کو مکمل ہوگی۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔