بلوچستان: ’قائدِ حزبِ اختلاف کی تقرری غیر آئینی‘

آخری وقت اشاعت:  منگل 19 مارچ 2013 ,‭ 18:18 GMT 23:18 PST

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کی ہائی کورٹ نے جمیعت علمائے اسلام کے مولانا عبدالواسع کی بطور قائدِ حزبِ اختلاف تقرری کو غیر آئینی قرار دے دیا ہے۔

بلوچستان ہائی کورٹ کے چیف جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور جسٹس نعیم اختر پر مشتمل بنچ نے منگل کو ایک درخواست پر یہ حکم دیا ہے۔

جمیعت علمائے اسلام (ف) کے پارلیمانی رہنما مولانا عبدالواسع کی بلوچستان اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف کے طور پر تقرر کا نوٹیفیکیشن اتوار کو رات گئے جاری کیا گیا تھا۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔