جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو نگراں وزیراعظم

آخری وقت اشاعت:  اتوار 24 مارچ 2013 ,‭ 07:28 GMT 12:28 PST

پاکستان الیکشن کمیشن نے جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو کو ملک کا نگراں مقرر کر دیا ہے۔

پاکستان کی قومی اسمبلی کی تحلیل کے آٹھ دن بعد الیکشن کمیشن نے اتوار کو ملک کے نگراں وزیراعظم کا انتخاب کیا۔

نگراں وزیر اعظم کے لیے حکومت کے نامزد کردہ ڈاکٹر عشرت حسین، جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو اور حزبِ مخالف کے نامزد امیدواروں جسٹس ریٹائرڈ ناصراسلم زاہد اور رسول بخش پلیجو کے ناموں پر غور کیا گیا

تین ستمبر 1929 کو بلوچستان کے ضلع جعفرآباد کے گاؤں اعظم خان میں پیدا ہوئے۔ 1954 میں سندھ یونیورسٹی سے گریجویشن اور دو برس بعد کراچی یونیورسٹی سے قانون کی سند حاصل کی۔

ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت کے آخری ایام میں یعنی 20 جون 1977 میں بلوچستان ہائی کورٹ کے عارضی جج بنے۔ انہیں ضیاءالحق نے مستقل جج بنایا اور بطور چیف جسٹس انہوں نے 29 ستمبر 1991کو ریٹائر کیا۔ ریٹائرمنٹ کے ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں وفاقی شرعی عدالت کے جج بن گئے اور میاں نواز شریف کے دور میں 17 نومبر 1992 کو وفاقی شرعی عدالت کے چیف جسٹس بنے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔