’تیمرلان وہابی مکتبہ فکر کی جانب راغب ہوگیا تھا‘

امریکی شہر بوسٹن میں دھماکوں میں مبینہ طور پر ملوث ہونے والے بھائیوں کے گھر والوں نے بی بی سی کو بتایا کہ بڑا بھائی تیمرلان امریکہ میں رہتا ہوا انتہا پسندی کی جانب راغب ہوا۔

تیمرلان کی ایک آنٹی نے بتایا کہ ان کا خاندان چیچنیا سے داغستان منتقل ہوئے تھے اور ان سے ملنے کے لیے وہ پچھلے سال داغستان آیا تھا۔

تیمرلان کی آنٹی نے کہا کہ تیمرلان کی ان کے شوہر سے بڑی لمبی بحث ہوئی تھی اور اس بحث میں صاف ظاہر تھا کا وہ اسلام کے سخت گیر وہابی مکتبہ فکر کی جانب سے راغب ہو گئے تھے۔

ان کی آنٹی کا کہنا تھا کہ خاندان میں کوئی بھی اسلام کے سخت گیر وہابی مکتبہ فکر سے تعلق نہیں رکھتا۔