آدھا بلوچستان تاریکی میں ڈوب گیا

بلوچستان کے 30 میں سے 17 اضلاع بجلی کے ٹاور گرنے کی وجہ سے تاریکی میں ڈوب گئے ہیں۔

کوئٹہ الیکٹرک سپلائی کارپوریشن کے ذرائع کے مطابق منگل کی رات آٹھ بجے چھتر کے مقام پر بجلی کے دو ٹاور تخریب کاری کا نشانہ بنائے گئے جس سے کوئٹہ میں بجلی کی فراہمی معطل ہو گئی۔

کل نوتال میں بھی دو ٹاور تباہ کیے گئے تھے۔ اس کی ذمے داری کالعدم تنظیم بلوچ رپبلکن آرمی نے قبول کر لی تھی۔

بلوچ رپبلکن آرمی بلوچستان میں سوئی گیس پائپ لائن اور بجلی کی ٹاوروں سمیت مختلف سرکاری تنصیبات پر حملے کرتی رہی ہے۔