کراچی: فائرنگ سے وکیل دو بیٹوں سمیت ہلاک

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں فائرنگ کے ایک واقعے میں ہائی کورٹ کے وکیل اپنے دو بیٹوں سمیت ہلاک ہوگئے ہیں۔

سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے واقعہ کا ازخود نوٹس لیا ہے۔

لیاری ٹاؤن کی کلری پولیس کا کہنا ہے کہ کوثر ثقلین اپنے بچوں کو سکول چھوڑنے جا رہے تھے کہ ماڑی پور روڑ پر مچھر کالونی کے قریب مسلح افراد نے ان کی گاڑی پر شدید فائرنگ کر دی۔

فائرنگ سے چودہ سالہ عون عباس اور بارہ سالہ اویس عباس موقعے پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ کوثر ثقلین شدید زخمی ہوگئے جنہیں سول ہپستال پہنچایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسے۔

دریں اثناء کالعدم شدت پسند تنظیم لشکر جھنگوی کے ترجمان نے بی بی سی کو فون کر کے ہلاکتوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔