سکھر اور پشاور حملے ہم نے کیے: طالبان

کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان نے سکھر میں آئی ایس آئی کے دفتر پر بدھ کے روز ہوئے حملے اور جمعرات کو پشاور میں فرنٹیئر پولیس کے ڈپٹی کمانڈنٹ گل ولی خان پر ہونے والے حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔

کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان کے نئے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے بی بی سی کو اپنے پہلے انٹرویو میں بتایا کہ سکھر میں آئی ایس آئی کے دفتر پر حملہ تحریک طالبان نے کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ مفتی ولی الرحمٰن کے قتل کا بدلے میں کیا گیا ہے۔ ان کے مطابق سندھ سمیت پورے ملک میں اس طرح کے حملے ہوتے رہیں گے۔

اس سے قبل سکھر میں آئی ایس آئی کے دفتر پر حملے کی ذمہ داری جند اللہ نامی تنظیم نے قبول کی تھی۔ تاہم شاہد اللہ شاہد کے مطابق جند اللہ نامی تنظیم کا تحریک طالبان سے کوئی تعلق نہیں ہے۔