امریکہ: موبائل فونز کے بعد سام سنگ کی واشنگ مشین بھی پھٹنے لگی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption کمپنی نے متاثرہ ماڈلز استمعال کرنے والے صارفین سے کہا ہے کہ وہ اس قسم کی اشیا دھوتے وقت کم رفتار پر مشین کو چلائیں

جنوبی کوریا کی ٹیکنالوجی کمپنی سام سنگ نے تصدیق کی ہے کہ اس کی ایک واشنگ مشین ’پھٹنے‘ کے واقعے بعد اس کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

واشنگ مشین ’پھٹنے‘ کا واقعہ امریکہ میں پیش آیا اور کمپنی کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں صارفین کے حقوق کا خیال رکھنے والی امریکی فرم کے ساتھ اس کی بات چیت جاری ہے۔

دی کنزیومر پراڈکٹ سیفٹی کمیشن (سی پی ایس سی) نے خبردار کیا ہے کہ سام سنگ کی بعض جدید ترین مشینوں میں مسائل موجود ہیں۔

سام سنگ کے خلاف مقدمہ کرنے والی قانونی فرم کا کہنا ہے کہ اس نقص کی وجہ سے نقصان ہو سکتا تھا یا صارف زخمی بھی ہو سکتا تھا۔

کمپنی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ جو ماڈلز شمالی امریکہ سے باہر فروخت کیے گئے ہیں ان میں یہ مسائل نہیں ہیں۔

خیال رہے کہ اس سے قبل سام سنگ ہی کے سمارٹ فون (نوٹ سیون) کی بیٹریوں کے ’پھٹنے کا معاملہ بھی سامنے آیا تھا جس کے باعث کمپنی کو موبائل فون واپس منگوانا پڑے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Ariel Gonzalez
Image caption اس سے قبل سام سنگ کے سمارٹ فونز میں بھی کچھ ایسا ہی مسئلہ سامنے آیا تھا

سام سنگ اور سی پی ایس سی کا کہنا ہے کہ بنیادی طور پر اس نقص سے مارچ 2011 سے 2016 کے درمیان فروخت کی جانے والی واشنگ مشینیں متاثر ہوئی ہیں۔

اس حوالے سے سام سنگ کا کہنا تھا کہ ’بعض اوقات متاثرہ مشینوں میں اس وقت غیر معمولی حرکت دیکھی گئی ہے جب اس میں بستر، بھاری یا پانی سے محفوظ رہنے والی اشیا دھونے کی کوشش کی جاتی ہے اور اس سے صارف کو نقصان پنچنے کا خطرہ ہو سکتا ہے۔‘

کمپنی نے متاثرہ ماڈلز استمعال کرنے والے صارفین سے کہا ہے کہ وہ اس قسم کی اشیا دھوتے ہوئے مشین کو کم رفتار پر چلائیں۔

سام سنگ نے متاثرہ ماڈل کا نام تو نہیں بتایا ہے تاہم صارفین کو اس مشین کے سیریل نمبر کے ذریعے یہ معلوم کرنے کی سہولت فراہم کی ہے کہ آیا ان کی مشین متاثرہ ماڈل کی تو نہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں