دنیا بھر میں لوگ سُپر مون دیکھنے کے لیے تیار

چاند تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اس وقت زمین سے چاند کا فاصلہ 356509 کلومیٹر ہوگا

دنیا بھر میں لوگ سُپر مون دیکھنے کی تیاری کر رہے جس کے دوران چاند سنہ 1948 کے بعد زمین سے قریب تر آ جائے گا۔

برطانیہ میں اس کا بہترین نظارہ شام کو دیکھنے کو ملے گا تاہم چاند زمین سے قریب ترین مقام پر گرینج کے معیاری وقت کے مطابق 11:21 منٹ پر آ جائے گا۔

اس وقت زمین سے چاند کا فاصلہ 356509 کلومیٹر ہوگا۔

مبصرین کے مطابق یہ معمول کے چاند سے سات فیصد بڑا ہوگا اور 15 فیصد زیادہ روشن ہوگا۔ تاہم انسانی آنکھ مشکل اس فرق کو محسوس کر پائے گی۔

اور اس کے بعد چاند 25 نومبر سنہ 2034 تک اتنا قریب نہیں آئے گا۔

برطانیہ میں محکمۂ موسمیات کے مطابق جس وقت چاند زمین کے قریب تری مقام پر ہوگا اس وقت وہاں مطلع ابر آلود ہوگا۔

چاند زمین کے گرد گرش کے دوران مختلف حصوں میں روشن ہوتا ہے اور مکمل روشن ہونے دنوں میں اسے پورا چاند یا چودھویں کا چاند کہا جاتا ہے۔ اوسطاً 27 دن کا یہ چکر چاند زمین کے گرد بیضوی مدار میں کاٹتا ہے۔

اس کا مطلب ہے کہ چاند کا ہماری زمین سے فاصلہ کسی ایک حد کا اور مستقل نہیں ہے بلکہ یہ اس کے مدار کے حساب سے بدلتا رہتا ہے۔ لیکن اس غیر متوازی مدار کے علاوہ زمین کی سورج کے گرد گردش بھی مزید تبدیلیوں کا باعث بنتی ہے۔

اس کا مطلب ہے کہ چاند کی زمین سے اس قربت کا کوئی وقتِ مقررہ نہیں ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اس کے بعد چاند 25 نومبر سنہ 2034 تک اتنا قریب نہیں آئے گا

لیکن جب بھی چاند کی قربت اور پورے چاند کے اوقات ایک ساتھ آ جاتے ہیں تو یہ ’سپر مون‘ کہلاتا ہے۔

محققین کے مطابق سپر مون اور معمول کے پورے چاند میں فرق بہت باریک ہوتا ہے۔

عام طور پر سپر مون 14 فیصد تک بڑا اور 30 فیصد تک روشن ہو سکتا ہے لیکن یہ تناسب چاند کے اپنے مدار میں سب سے زیادہ دور کے فاصلے سے ہے۔

ڈاکٹر کرس نراتھ نے دی کنورسیشن ویب سائٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ فرق بہت معمولی ہوتے ہیں اور چونکہ سردیوں کے دنوں میں چاند ویسے ہی بہت اونچا ہو جاتا ہے اس لیے صرف تصاویر کا جائزہ لینے سے ہی یہ فرق محسوس کیے جا سکتے ہیں۔ ‘

’لیکن اس بات سے قطع نظر کہ یہ بڑا اور روش ہیں چاند وسے بھی نظروں کو بھان والی چیز ہے۔‘

تاہم نیو یارک کے ہیڈین پلانیٹیریم میں ڈائریکٹر نیل ڈی گریسی ٹائسن کا کہنا ہے کہ اس معاملے کو ضرورت سے زیادہ بڑھاوا دیا گیا ہے۔

سٹار ٹاک ریڈیوں سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا ’میں نہیں جانتا کہ اسے سب سے پہلے سپر مون کہا کس نے تھا۔‘

’کیا آپ ایک 16 انچ کہ پزے کو محض 15 انچ کے پزے کے مقابلے میں سُپر پزا کہیں گے؟‘

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں