لمبے دانتوں والے طویل العمر ہاتھی ’ستاؤ ٹو‘ کی ہلاکت

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ستاؤ ٹو کے ایک دانت کا وزن ساڑھے اکاون کلو جبکہ دوسرے کا ساڑھے پچاس کلو ہے

ہاتھیوں کی بقا کے لیے کام کرنے والے ایک گروہ کے مطابق براعظم افریقہ کا طویل العمر اور غیر معمولی طور پر لمبے دانتوں والا ہاتھی ’جائنٹ ٹسکر‘ مبینہ طور پر غیرقانونی شکار کے دوران مارا گیا ہے۔

ہاتھی جس کا نام ستاؤ ٹو تھا اور عمر 50 برس تھی ساؤ نیشنل پارک میں مردہ حالت میں ملا۔

٭انڈیا کی معمر ترین ہتھنی ’اندرا‘ چل بسی

اگرچہ ابھی ہاتھی کے مرنے کی اصل وجہ معلوم نہیں ہو سکی تاہم پارک کے محافظوں کا خیال ہے کہ ہاتھی کو کسی نے زہر میں بجھا تیر مارا ہے۔

ستاؤ ٹو سے قبل ایسے ہی غیر معمولی طور پر لمبے دانتوں والے ہاتھی ستاؤ ون کو سنہ 2014 میں غیر قانونی شکار کے دوران ہلاک کیا گیا تھا۔

اب افریقہ میں لمبے دانتوں والے ہاتھیوں کی تعداد 30 سے بھی کم رہ گئی ہے۔

پارک انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کینیا کی وائلڈ سروس کی ٹیم نے غیر قانونی شکاریوں کے کسی بھی دعوے سے قبل ہی ستاؤ ٹو کے دانت نکال لیے ہیں۔

ایک دانت کا وزن ساڑھے اکاون کلو جبکہ دوسرے کا ساڑھے پچاس کلو ہے۔

بتایا گیا ہے کہ ہلاک ہونے والے ہاتھی کی لاش رواں برس جنوری میں پارک کے فضائی معائنہ کے دوران ملی تھی تاہم اس کا اعلان ایک روز قبل کیا گیا ہے۔

بعد میں پارک انتظامیہ نے غیر قانونی شکاریوں کو حراست میں بھی لے لیا تھا۔

انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حراست میں لیے گئے دونوں شکاریوں کے پاس زہر میں بھجے 12 تیر، تین کمانیں اور ایک اے کے 47 رائفل ملی تھی۔

اسی بارے میں