’ڈائنوسارز کے فروغ میں آتش فشانی کا اہم کردار رہا‘

آتش فشاں تصویر کے کاپی رائٹ Science Photo Library
Image caption آتش فشاں سے فضا میں پارے کی قلیل مقدار شامل ہو جاتی ہے

ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ آج سے 20 کروڑ سال قبل دس لاکھ سال تک بڑے پیمانے پر آتش فشانی سے ایسا ماحول پیدا ہو گیا جس نے ڈائنوساروں کی نشوونما میں اہم کردار ادا کیا۔

سائنس دانوں نے قدیم چٹانوں کا جائزہ لیا تو پتہ چلا کہ ان کے اندر ایسا عنصر موجود ہیں جس سے پتہ چلتا ہے کہ آج سے 20 کروڑ برس قبل بہت بڑے آتش فشاں پھٹے تھے۔

اس سے اس زمانے میں موجود دوسرے بڑے جانور معدوم ہونا شروع ہو گئے جس سے ڈائنوساروں کو پھلنے پھولنے کا موقع مل گیا۔

یہ تحقیق سائنسی رسالے پی این اے ایس میں شائع ہوئی ہے۔

تحقیق کے مرکزی مصنف لارنس پرسیوال کا تعلق اوکسفرڈ یونیورسٹی کے شعبۂ ارضیات سے ہے۔ انھوں نے کہا: 'ڈائنوساروں نے اس حیاتیاتی ماحول کا فائدہ اٹھایا جو جانوروں کی معدومی کی وجہ سے خالی ہو گیا تھا۔'

تحقیق کاروں نے چار مختلف براعظموں سے آتش فشانی چٹانوں کے نمونے لے کر ان پر تحقیق کی۔ اس دوران انھوں نے ایک عنصر پارے کا جائزہ لیا۔ آتش فشاں پھٹنے سے فضا میں پارے کی قلیل مقدار بھی شامل ہو جاتی ہے جو رفتہ رفتہ زمین پر گر کر لاکھوں برس کے عمل کے دوران چٹانوں میں شامل ہو جاتی ہے۔

پرسیوال نے کہا: 'جب آپ ان چٹانوں میں بڑی مقدار میں پارہ دیکھتے ہیں تو آپ یہ نتیجہ اخذ کر سکتے ہیں کہ اس وقت آتش فشاں پھٹے ہوں گے۔ اور ہم نے یہی چیز جانوروں کی معدومی کے وقت دیکھی۔'

تصویر کے کاپی رائٹ JESSICA WHITESIDE
Image caption چٹانوں میں پارے کی مقدار سے اس زمانے آتش فشاں کی شدت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے جب یہ چٹانیں بنی تھیں

جو جاندار ان آتش فشانوں کے آس پاس موجود ہوں گے، وہ ختم ہو گئے ہوں گے، تاہم دور بسنے والے بھی کچھ زیادہ محفوظ نہیں رہے ہوں گے کیوں کہ بار بار لاوا اگلنے والے آتش فشانوں سے تمام کرۂ ارض کا ماحول تبدیل ہو گیا ہو گا جس کی وجہ یہ ہے کہ فضا میں گرد اور گیسیں جمع ہونے سے سورج کی روشنی کا راستہ رک جاتا ہے۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ جانور بڑے پیمانے پر معدوم ہونا شروع ہو گئے۔ ان میں مگرمچھ سے ملتے جلتے جانور، ریپٹائل نما ممالیہ جانور اور جل تھلیے شامل تھے جن کی نسلیں ختم ہو گئیں۔

تاہم ابتدائی ڈائنوسار اس دوران بچ نکلے اور جب آتش فشاں ختم ہوئے تو انھیں ساری دنیا میں پھیلنے کا موقع مل گیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں