خطرے سے دوچار ویکیوٹا کے لیے ڈولفن کا استعمال

تصویر کے کاپی رائٹ PAULA OLSON
Image caption یہ ممالیہ کم ہی نظر آتے ہیں

میکسیکو کی حکومت کا کہنا ہے کہ ویکیوٹا نامی ممالیہ کی نسل کو خاتمے سے بچانے کے لیے وہ ان ڈولفن مچھلیوں کو استعمال کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جنھیں امریکی نیوی نے تربیت دی ہے۔

ملک کے وزیرِ ماحولیات رافیل پاسیحوانوں کے بقول ڈولفن کے ذریعے ان ممولیوں کو محفوظ آب گاہوں میں لایا جائے گا۔

میکسیکو نے جال سے مچھلیاں پکڑنے پر بھی مستقل پابندی عائد کر دی ہے کیونکہ خیال کیا جاتا ہے کہ ویکیوٹا ان جالوں میں پھنس کر مر جاتے ہیں۔

سائنسدانوں کا اندازہ ہے کہ خلیج کیلیفورنیا میں تقریباً چالیس ویکیوٹا ہی بچے ہیں۔

وزیرِ ماحولیات کے مطابق اس منصوبے پر رواں برس ستمبر سے عملدرآمد شروع کر دیا جائے گا۔

ایک مقامی ریڈیو سے بات کرتے ہوئے رافیل پاسیحوانوں کا کہنا تھا کہ ’ہم گزشتہ ایک برس سے امریکی نیوی اور ان کی جانب سے گم ہوجانے والے غوطہ خوروں کو تلاش کرنے کے لیے تربیت دی جانے والے ڈالفنز کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ ہم انھیں ویکیوٹا کو ڈھونڈنے کی تربیت دے رہے ہیں۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’ ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا کہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں ان ممولیوں کو پکڑا جائے تاکہ ان کی نسل کو ختم ہونے سے بچانے کا موقع مل سکے۔‘

میکسیکو کی حکومت کی جانب سے ویکیوٹا کی ہلاکت کا باعث بننے والے جالوں پر مستقل پابندی کے اعلان کا ہالی وڈ کے معروف اداکار لیونارڈو ڈی کیپریو نے بھی خیر مقدم کیا ہے اور اس حوالے ٹویٹ بھی کی ہے۔

خیال رہے کہ لیونارڈو ویکیویٹا ممالیہ کی نسل کو خاتمے سے بچانے کے لیے چلائی جانے والی مہم کا حصہ رہے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں