موٹاپا گردے کے کینسر کی اہم وجہ

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption برطانیہ میں تقریباً 70 فیصد مرد اور تقریباً 60 فیصد خواتین موٹاپے کا شکار ہیں

ماہرین کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں گردے کے کینسر کے مریضوں میں اضافے کی ایک اہم وجہ موٹاپا ہے۔

’کینسر ریسرچ یو کے‘ نے جو اعداد و شمار شائع کیے ہیں، ان میں بتایا گیا ہے کہ سنہ 2009 میں گردے کے کینسر کے نو ہزار سے زیادہ واقعات سامنے آئے، جبکہ سنہ 1975 میں ان کی تعداد محض دو ہزار تین سو تھی۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ بہت کم لوگ اس بات کو سمجھ پاتے ہیں کہ وزن زیادہ ہونے سے بھی کینسر کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

ماہرین کے مطابق موٹاپے کی وجہ سے گردے کے کینسر کا خطرہ تقریباً ستّر فیصد جبکہ سگریٹ نوشی کی وجہ سے گردے کے کینسر کا خدشہ پچاس فیصد بڑھ جاتا ہے۔

پیشاب میں اگر خون آ رہا ہو تو ہوشیار ہو جانا چاہئے کیونکہ یہ گردے کے کینسر کی علامت ہو سکتا ہے. ویسے وقت رہتے پتہ چل جائے تو سرجری کے ذریعے گردے کے کینسر کو ٹھیک کیا جا سکتا ہے.

ماہرین کا کہنا ہے کہ وزن بڑھنے نے نہ صرف گردے کے کینسر کا خطرہ بڑھتا ہے، بلکہ اس سے چھاتی اور رحم کے کینسر کا خطرہ بھی بڑھتا ہے۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ موٹاپے کی وجہ سے انسان کے جسم میں کچھ خاص طرح کے ہارمونز کا اخراج بڑھ جاتا ہے جو ان بیماریوں کی وجہ بنتے ہیں۔

برطانیہ میں گزشتہ پینتیس برس میں سگریٹ نوشی کرنے والوں کی تعداد کم ہوئی ہے، لیکن موٹاپے کا مسئلہ بڑھ رہا ہے اور. یہاں تقریباً 70 فیصد مرد اور تقریباً 60 فیصد خواتین موٹاپے کا شکار ہیں۔

اسی بارے میں