فیس بک مائیکروسافٹ کے پیٹنٹس کی خریدار

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption فیس بک اس سے پہلے آئی بی ایم سے بھی پیٹنٹ خرید چکی ہے

دنیا کی مقبول ترین سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ فیس بک نے مائیکروسافٹ سے پانچ سو پچاس ملین ڈالر کے عوض کچھ پیٹنٹس خریدنے کا اعلان کیا ہے۔

مائیکروسافٹ نے یہ پیٹنٹس حال ہی میں اے او ایل سے خریدے تھے۔

مائیکروسافٹ نے اے او ایک کے پیٹنٹس کے لیے ایک ارب ڈالر سے زیادہ کی ادائیگی کی تھی۔

فیس بک کے ایک وکیل نے اس سودے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’یہ فیس بک کے مفادات کے تحفظ کے لیے انٹلیکچوئل پراپرٹی پورٹ فولیو کی تیاری کے سلسلے میں ایک اہم قدم ہے‘۔ فیس بک اس سے پہلے آئی بی ایم سے بھی پیٹنٹ خرید چکی ہے۔

خیال رہے کہ رواں سال کے آغاز میں یاہو نے فیس بک پر پیٹنٹ کی خلاف ورزی پر مقدمہ کر دیا تھا۔

مائیکرو سافٹ کے وکیل بریڈ سمتھ کا کہنا ہے کہ ’فیس بک سے ہونے والے معاہدے سے ہم اپنے مقاصد حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ اس رقم میں سے نصف دوبارہ حاصل کر لیں گے جو ہم نے اے او ایل کی نیلامی میں خرچ کی تھی‘۔

مائیکروسافٹ نے اے او ایل سے نو سو پچیس پیٹنٹ اور پیٹنٹ کی درخواستیں خریدی تھیں اور اب وہ ان میں سے چھ سو پچیس پیٹنٹ فیس بک کو فروخت کر رہا ہے جبکہ باقی دو سو پچھہتر کے استعمال کا لائسنس بھی فیس بک نے حاصل کیا ہے۔

دنیا میں بری ٹیکنالوجی کمپنیوں میں مقدمے بازی سے بچنے کے لیے پیٹنٹ خریدنے یا ان کے استعمال کے معاہدے کرنے کے رجحان میں اضافہ ہوا ہے۔ رواں سال کے آغاز سے اب تک انٹیل، گوگل اور اب فیس بک نے ایسے معاہدے کیے ہیں۔

.

اسی بارے میں