امریکہ: سیلی رائڈ انتقال کر گئیں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سیلی رائڈ سنہ انیس سو تراسی میں چیلنجر نامی خلائی جہاز کے ذریعے خلاء میں گئیں

امریکہ کی پہلی خاتون خلاء باز سیلی رائڈ انتقال کر گئیں۔ ان کی عمر اکسٹھ برس تھی اور وہ کینسر میں مبتلا تھیں۔

سیلی رائڈ فاؤنڈیشن کی جانب سے جاری کیے جانے والے ایک بیان کے مطابق سیلی کا انتقال پیر کو امریکی ریاست کیلیفورنیا میں ہوا۔

بیان کے مطابق سیلی رائڈ سنہ انیس سو تراسی میں چیلنجر نامی خلائی جہاز کے ذریعے خلاء میں گئیں۔

اگرچہ دنیا کی پہلی خاتون خلاء باز کا اعزاز سویت یونین کی ویلنتینا تیریسکووا کے پاس ہے جنہیں سنہ انیس سو تریسٹھ میں خلاء میں بھیجا گیا تھا تاہم امریکہ کی جانب سے خلاء کا سفر کرنے والی پہلی خاتون سیلی رائڈ تھیں۔

سیلی رائڈ کے سنہ انیس سو تراسی میں خلاء میں جانے کے بعد اب تک امریکہ اور دیگر ممالک سے پینتالیس سے زیادہ خواتین خلاء میں جا چکی ہیں۔

درین اثناء امریکی صدر براک اوباما نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انہیں سیلی کی موت کی خبر سن کر بہت دکھ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیلی رائڈر پہلی امریکی خاتون تھیں جو خلاء میں گئیں۔ اوباما نے انہیں ایک ’قومی ہیرو‘ اور ’رول ماڈل‘ قرار دیا۔

سیلی رائڈر امریکی ریاست کیلیفورنیا میں پیدا ہوئیں اور انہوں نے سٹینفورڈ یونیورسٹی سے ماسٹرز اور طبعیات میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔

سیلی رائڈ فاؤنڈیشن کےمطابق وہ نہ صرف پہلی امریکی خاتون تھیں جو خلاء میں گئیں بلکہ وہ امریکہ کی کم عمر ترین شہری بھی تھیں جنہوں نے بتیس سال کی عمر میں مدار کا چکر لگایا۔

اسی بارے میں