برطانیہ: لیبلز کاگوگل پلے سروس پر اعتراض

آخری وقت اشاعت:  منگل 13 نومبر 2012 ,‭ 13:28 GMT 18:28 PST

برطانیہ کی سب سے بڑی میوزک ریکارڈنگ کمپنی لیبلز نے گوگل کی طرف سے نئے قانونی طور پر میوزک سروس دینے پر اعتراض کیا ہے۔

برطانیہ کی سب سے بڑی میوزک ریکارڈنگ کمپنی لیبلز نےگوگل کی طرف سے قانونی طور پر نئی میوزک سروس دینے پر اعتراض کیا ہے۔

لیبلز کا کہنا ہے کہ نئی سروس کا کوئی جواز نہیں بنتا کیونکہ گوگل کا سرچ انجن اب بھی میوزک کے غیر قانونی استعمال کو تقویت دیتا ہے۔

گلوگل کا کہنا ہے کہ وہ میوزک سروس گوگل پلے کے ذریعے اینرائڈ سسٹمز پر غیر قانونی میوزک ڈاؤن لوڈ کو روک سکے گا۔

برٹس فونوگرافک کی صنعت یابی پی آئی نے الزام لگایا ہے کہ گوگل غیر قانونی میوزک ڈاؤن لوڈ کرنے کے اقدامات کو روکنے کے وعدے کو پورا نہیں کر رہا۔

غیر قانونی میوزک ڈاؤن لوڈ کرنے سے گلوگاروں کو نقصان پہنچتا ہے۔

گوگل نےکہا تھا کہ وہ اگست میں سرچ کے نتائج کے طریقہ کار کو تبدیل کرے گا جس میں ویب سائٹس کو کاپی رائٹ کے نوٹس وصول ہونے کی تعداد کو مدنظر رکھا جائے گا۔

جس ویب سائٹس کو زیادہ نوٹس وصول ہوئے ہوں گے وہ سرچ میں نیچے آئے گی۔

گوگل کے کہنا ہے کہ وہ ایپل کے آئی ٹیونز کی اجارہ داری ختم کرنے کے لیے صارفین کو بیس ہزار گانوں کو سٹور کرنے کی سہولت دے گا۔

گوگل کے سمعی والکونن نے کہا’صارفین کو قانونی طور پر میوزک حاصل کرنے کا طریقہ کار آسان بنائیں گے جس کی وجہ سے میوزک کا غیر قانونی استعمال ختم ہو جائے گا۔‘

بی پی آئی کا کہنا کہ وہ برطانیہ میں اس نئے سروس کا استقبال کرتے ہیں کیوں کے اس سے میوزک کی صنعت کو اور صارفین کو فائدہ ہو گا۔

گوگل پلے کا سروس امریکہ میں پہلے سے موجود ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔