ذہنی طور پر ماؤف شخص سوالوں کے جواب دینے کے قابل

آخری وقت اشاعت:  منگل 13 نومبر 2012 ,‭ 11:35 GMT 16:35 PST
سکاٹ روٹلی

سکاٹ روٹلی کے سر میں شدید چوٹ لگی تھی جس کے بعد وہ کوما میں چلے گئے تھے

کینیڈا سے تعلق رکھنے والے تقریباً دس برس سے زیادہ عرصے سے کوما جیسی حالت میں رہنے والے ایک شخص ڈاکٹروں کو یہ بتانے میں کامیاب ہوگئے وہ تکلیف میں نہیں ہیں یعنی انہیں کسی قسم کا درد نہیں ہو رہا۔

یہ پہلی بار ہوا ہے کہ جب کسی شخص کو شدید ذہنی چوٹ باعث ذہنی طور پر ماؤف شخص ڈاکٹروں کو اپنے علاج سے متعلق سوالوں کے جواب دے سکے۔

انتالیس سالہ سکاٹ روٹلی سے ڈاکٹروں نے ان کے دماغی حرکات کا سکین یا ایم آر آئی کرتے وقت بعض سوالات پوچھے جس کا انہوں نے جواب دیا۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ سکاٹ روٹلی کا اس طرح ڈاکٹروں کے سوالوں کے جواب دینا ایک بڑی دریافت ہے اور اس طرح کے واقع کا مطلب ہے کہ طبی کتابیں کو دوبارہ لکھنے کی ضرورت ہوگی۔

سکاٹ روٹلی تقریباً بارہ برس پہلے ایک کار حادثے میں شدید زخمی ہوگئے تھے اور ان کے دماغ پر شدید چوٹیں آئیں تھیں۔

گزشتہ بارہ برس سے ان کے طبعی معائنوں کے دوران ڈاکٹروں کو کبھی ایسا نہیں لگا کہ وہ بول سکتے ہیں یا انہیں یہ معلوم ہے کہ وہ کہاں ہیں اور کس حالت میں ہیں۔

یونیورسٹی آف ویسٹرن اونتاریو میں دماغی علاج کے ڈاکٹر پروفیسر ایدریان اوین کا کہنا ہے کہ سکاٹ روٹلی نے جس طرح سے ڈاکٹروں کو اپنے بارے میں بتایا اس سے یہ بات صاف ہے کہ وہ کوما کے مریض نہیں ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ ایک بے حد بڑی کامیابی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا ’برسوں سے ہماری کوشش رہی ہے کہ علاج کے دوران مریضوں سے ان کی حالت کے بارے میں اہم سوال پوچھے جائیں تاکہ ان کی حالت میں بہتری کے لیے اقدامات کیے جا سکیں۔

سکاٹ روٹلی کے والدین کا کہنا ہے کہ انہیں ہمیشہ یہ لگتا تھا کہ سکاٹ بے ہوش نہیں ہیں اور وہ اپنی آنکھیں گھما کر ایک ہاتھ کے اشارے سے بات چیت کرسکتے تھے لیکن ان کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں نے کبھی اس بات کو نہیں قبول کیا۔

سکاٹ روٹلی کا دس برس سے علاج کرنے والے ڈاکٹر پروفیسر برائن ینگ کا کہنا ہے کہ سکاٹ روٹلی کے حالیہ سکین کے نتائج نے اس طرح کے مریضوں کے رویے کے بارے میں اب تک ہونے والے ٹیسٹ کو الٹ کر رکھا دیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔