انسان اور چوہوں کا چولی دامن کا ساتھ

آخری وقت اشاعت:  پير 17 دسمبر 2012 ,‭ 12:53 GMT 17:53 PST
گٹر کا چوہا

چوہوں سے ہمارا فاصلہ چھ فٹ ہے یا ایک سو چونسٹھ فٹ: تحقیق کیا کہتی ہے

پرانی کہاوت ہے کہ ہم کبھی چوہوں سے چھ فٹ سے زیادہ دور نہیں ہوتے، لیکن اس بات کی بنیاد کیا ہے اور یہ کس حد تک درست ہے؟

جامعہ ہڈرزفیلڈ میں چوہوں کے ایک ماہر پروفیسر راب سمتھ کے خیال میں یہ بات کسی زمانے میں گھروں میں صفائی کا رجحان پیدا کرنے کے لیے محکمہ زراعت کی طرف سے پھیلائی گئی تھی۔

اس کہاوت کی بنیاد وہ اعداد و شمار بھی ہو سکتے ہیں جن کے تحت چوہوں کی آبادی انسانوں سے زیادہ ہے۔ چوہوں پر ایک کتاب کے مصنف رابرٹ سلِیوان نے بتایا کہ یہ اعداد و شمار عام طور پر کہانیوں میں استعمال کیے جاتے ہیں اور ایک سو سال سے ایسا ہو رہا ہے۔

سن انیس سو نو میں ڈبلیو آر بوٹلر نے ’دی رٹ پرابلم‘ کے نام سے کتاب لکھی تھی جس میں نے انہوں نے انگلینڈ کے دیہات میں کسانوں سے معلوم کیا تھا کہ کیا یہ درست ہے کہ ہر ایکڑ میں ایک چوہا ہوتا ہے۔

مصنف نے کسانوں سے بات کرنے کے بعد نتیجہ اخذ کیا کہ کیونکہ برطانیہ میں چار کروڑ ایکڑ زمین پر کاشت ہوتی تھی تو چوہوں کی آبادی بھی چار کروڑ ہوگی اور اتفاق سے سن انیس سو نو میں برطانیہ کی آْبادی بھی تقریباً چار کروڑ ہی تھی۔ اس طرح یہ بات عام ہو گئی کہ ہر انسان کے لیے ایک چوہا ہوتا ہے۔

خوراک اور ماحولیاتی تحقیق کی ایجنسی میں کام کرنے والے ڈاکٹر ڈیو کاون نے پرانے تجزیوں کی بنیاد پر آجکل چوہوں کی آبادی کے بارے میں اندازہ لگانے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گھروں میں چوہوں کی موجودگی بہت غیر معمولی بات ہے۔ ’آدھ فیصد سے بھی کم گھروں میں چوہے پائے جاتے ہیں۔‘ انہوں نے کہا کہ ایسے گھروں میں بھی ایک یا دو چوہے ہی پائے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تین فیصد ایسے گھر ہیں جن کے باہر چوہے پائے جاتے ہیں اور اس طرح برطانیہ بھر میں گھروں کے ارد گرد پائے جانے والے چوہوں کی تعداد پندرہ لاکھ ہے۔

ڈاکٹر کاون نے کہا کہ برطانیہ میں اٹھارہ لاکھ کاروباری عمارات ہیں اور ان میں سے پانچ فیصد میں چوہے پائے جاتے ہیں اور اس طرح ایسے چوہوں کی تعداد دو لاکھ ہو سکتی ہے۔

انہوں نے کہا اس کے علاوہ چوہے گٹروں میں پائے جاتے ہیں لیکن یہاں چوہوں کی آبادی کے بارے میں اندازہ لگانا مشکل کام ہے۔ انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں گٹروں کی طوالت سولہ ہزار کلومیٹر ہے اور ان میں سے پانچ فیصد میں چوہے موجود ہیں۔

ڈاکٹر کاون نے کہا کہ سن انیس سو پچاس میں لوگوں کو گٹروں میں جا کر چوہے گننے کی اجازت تھی اور اس وقت کے کام سے ہمیں معلوم ہوتا ہے کہ فی ہیکٹر دو ہزار چوہے پائے جاتے تھے۔ انہی اعداد و شمار کی بنیاد پر کہا جا سکتا ہے گٹروں میں سولہ لاکھ چوہے پائے جاتے ہیں اور شہری ماحول میں ان کی تعداد تینتیس لاکھ ہے۔

اسی طرح انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں دو لاکھ زرعی یونٹ ہیں جن میں سے چالیس فیصد میں چوہے موجود ہیں اور مختلف تجزیوں کے مطابق ہر کھیت میں نوے چوہے ہیں۔ اس طرح دیہی چوہوں کی آبادی تقریباً ستر لاکھ ہے۔

اس سب کو جمع کیا جائے تو برطانیہ میں چوہوں کی آبادی تقریباً ایک کروڑ پچاس لاکھ بنتی ہے اور یہاں انسانوں کی تعداد چھ کروڑ ہے۔ اس طرح یہاں ہر چھ انسانوں کے لیے ایک چوہا ہے۔

برطانیہ کے شہروں کا رقبہ تقریباً سولہ ہزار مربہ کلومیٹر اور یہاں اکتیس لاکھ شہری چوہے ہیں۔ اس طرح ہر چوہے کے حصے میں اوسطاً پانچ ہزار مربہ میٹر آتے ہیں۔ ڈاکٹر کاون کا کہنا ہے کہ ان اعداد و شمار کی بنیاد پر اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ برطانوی شہروں میں ہم ہر کسی بھی چوہے سے پچاس میٹر یا ایک سو چونسٹھ فٹ کے فاصلہ پر ہوں گے۔

کہاوت کے مطابق ہم ہر وقت کسی بھی چوہے سے چھ فٹ دور ہوتے ہیں، لیکن اب ہمیں معلوم ہوگیا کہ ایسا نہیں ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔