ہزاروں پاکستانی ویب سائٹس پر کنٹرول کا دعویٰ

آخری وقت اشاعت:  پير 4 فروری 2013 ,‭ 11:05 GMT 16:05 PST

’ہزاروں ویب سائٹس ہیک کرنے کے دعوے کا بظاہر کوئی ثبوت موجود نہیں‘

پاکستان سے تعلق رکھنے والے ہیکرز کے ایک گروپ نے ملک کی ہزاروں ویب سائٹس پر کنٹرول حاصل کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

پاک بگز نامی اس گروپ نے اتوار اور پیر کی درمیانی شب پاکستان میں ڈومینز کا انتظام کرنے والی انٹرنیٹ رجسٹری پی کے این آئی سی کو ہیک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

روزنامہ جنگ اور دی نیوز سمیت متعدد ویب سائٹس پر ہیکرز کی جانب سے شائع کیے جانے والے پیغام میں پی کے این آئی سی کو مخاطب کر کے کہا گیا تھا کہ اب ڈاٹ پی کے ڈومینز کا کنٹرول ان کے پاس نہیں رہا۔

ہیکرز نے اپنے پیغام میں انٹرنیٹ رجسٹری اور کل تیئیس ہزار ویب سائٹس پر مکمل کنٹرول کرنے کا دعویٰ کیا تھا تاہم ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ کے اعلیٰ اہلکار کا کہنا ہے کہ بظاہر ایسا دکھائی نہیں دیتا۔

اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بی بی سی اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس معاملے کی تحقیقات جاری ہیں لیکن ابھی تک کسی نے ہیکنگ کی شکایات کے ساتھ ان سے رابطہ نہیں کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر اتنے بڑے پیمانے پر ہیکنگ کی گئی ہوتی تو شکایات کا انبار لگ جاتا۔

پاکستان میں ٹیلی کمیونیکیشن اور انٹرنیٹ کے معاملات پر پوسٹ کرنے والے بلاگر عامر عطا کا کہنا ہے کہ ان کی اپنی ویب سائٹ بھی اس حملے کا نشانہ بنی لیکن اب اسے بحال کر دیا گیا ہے۔

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بھی کہا کہ اگرچہ متعدد ویب سائٹس ہیک ہوئی ہیں لیکن ہیکرز کی جانب سے ہزاروں ویب سائٹس کنٹرول کرنے کے دعوے کا بظاہر کوئی ثبوت موجود نہیں ہے۔

اس سلسلے میں جب انٹرنیٹ رجسٹری پی کے این آئی سی کے منتظمین سے بات کرنے کی کوشش کی گئی تو کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

خیال رہے کہ یہ گزشتہ چند ماہ میں دوسرا موقع ہے کہ ہیکرز نے ڈاٹ پی کے ڈومین والی ویب سائٹس کو نشانہ بنایا ہے۔ اس سے قبل ایک ترک ہیکرز نے نومبر میں دو سو سے زائد ویب سائٹس کو متاثر کیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔