ایچ آئی وی سے متاثرہ بچی ’شفایاب‘

آخری وقت اشاعت:  پير 4 مارچ 2013 ,‭ 01:22 GMT 06:22 PST

محققین کا کہنا ہے امریکہ میں ایڈز کے وائرس (ایچ آئی وی) سے متاثرہ ایک بچی کا سٹینڈرڈ تھیراپی کے ذریعے کامیابی سے علاج کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ یہ ڈھائی سالہ بچی پیدائشی طور پر ایچ آئی وی میں مبتلا تھیں۔

امریکی ریاست مسی سپی سے تعلق رکھنے والے اس ڈھائی سالہ بچی کو گذشتہ ایک سال سے کوئی دوا نہیں دی جا رہی اور اس دوران ان کے جسم پر کوئی انفکیشن ظاہر نہیں ہوا۔

محققین کا کہنا ہے کہ اس علاج کو دوسرے بچوں پر آزمانے کے لیے مزید ٹیسٹوں کی ضرورت ہو گی تاہم اس کے نتائج ایچ آئی وی سے متاثرہ بچوں کے علاج میں مدد گار ہو سکتے ہیں۔

محققین کے مطابق اگر یہ بچی مرض سے پاک رہیں تو یہ دنیا کی دوسری ایسی انسان ہوں گی جو ایچ آئی وی سے مکمل طور پر شفایاب ہوئی ہیں۔واضح رہے کہ 2007 میں ٹموتھی رائے براؤن ایچ آئی وی سے شفایاب ہونے والے دنیا کے پہلے شخص تھے۔

امریکی شہر بالٹی مور میں قائم جان ہاپکنز یونیورسٹی کی ڈاکٹر ڈیبورا نے ان نتائج کو ایٹلانٹا میں ہونے والی ایک کانفرنس میں پیش کیا۔

انھوں نے کہا علاج سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ ایچ آئی وی سے متاثرہ چھوٹے بچوں کا علاج کیا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔